Milad un Nabi | نویں 9 صدی اور ذکرِ میلاد النبی

Rate this post

نویں صدی اور ذکرِ میلاد النبی :-  (1.) امام جلال الدین عبد الرحمن بن ابی بکر سیوطی رحمہ اللہ (المتوفی:٩١١ھ) نے میلاد النبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم پر ایک کتاب بعنوان : “حسن المقصد فی عمل المولد” تحریر فرمائی ۔ اس میں سے چند اقتباسات نقل کئے جاتے ہیں ۔

حضور نے میلاد خود منایا

    🔷 فرمایا : “یوم میلاد النبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم منانے کے حوالے سے ایک اور دلیل جو مجھ پر ظاہر ہوئی ہے وہ ہے جسے امام بیہقی رحمہ اللہ نے حضرتِ سیدنا انس رضی ﷲ عنہ سے نقل کیا ہے کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے اعلان نبوت کے بعد خود اپنا عقیقہ کیا باوجود اس کے کہ آپ کے دادا حضرت عبد المطلب رضی ﷲ عنہ آپ کی ولادت کے ساتویں روز آپ کا عقیقہ فرما چکے تھے ، اور عقیقہ دو بار نہیں کیا جاتا ۔ پس یہ واقعہ اسی چیز پر محمول کیا جائے گا کہ آپ کا دوبارہ اپنا عقیقہ کرنا آپ کے شکرانے کا اظہار تھا اس بات پر کہ اللہ تعالیٰ نے آپ کو رحمۃ للعالمین اور آپ کی امت کے شرف کا باعث بنایا ۔

میلاد النبی

اظهار الشكر بمولده بالاجتماع واطعام الطعام ، ونحو ذلك من وجود القربات ، واظهار المسرات.

“اسی طرح ہمارے لئے مستحب ہے کہ ہم بھی حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے یوم ولادت پر خوشی کا اظہار کریں اور کھانا کھلائیں اور دیگر عبادات بجا لائیں اور خوشی کا اظہار کریں”

⛔حسن المقصد فى عمل المولد ، ص: ٦٤، ٦٥ ، مطبوعه دار الكتب العلمية بيروت ، لبنان.

⛔الحاوى للفتاوى للسيوطى ، ص: ٢٠٦، مطبوعه مكتبه رشيدية سركى روڈ کوئٹه.

محفل میلاد کی حقیقت

🔷 امام سیوطی رحمہ اللہ مزید لکھتے ہیں : “رسول معظم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا میلاد شریف اصل میں ایسی محفل ہوتی ہے جس میں جمع ہو کر بقدر سہولت قرآن کریم کی تلاوت کرتے ہیں اور حضور صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے ظہور کے بارے میں جو روایات ہیں وہ بیان کرتے ہیں ۔ولادت مبارکہ کے واقعات و معجزات پر مشتمل ہوں بیان ہوتے ہیں اس کے بعد ان کی مہمان نوازی پسندیدہ کھانوں سے کی جاتی ہے ۔

التی يثاب عليها صاحبها لما فيه من تعظيم قدر النبى صلى الله عليه وسلم واظهار الفرح والاستبشار بمولده الشريف.

“اس اہتمام کرنے والے کو حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی تعظیم اور آپ کے میلاد پر اظہارِ فرحت و مسرت کی بناء پر ثواب سے نوازا جاتا ہے”

⛔حسن المقصد فى عمل المولد ، ص: ٤١، مطبوعه دار الكتب العلمية بيروت ، لبنان.

⛔الحاوى للفتاوى للسيوطى ، ص: ١٩٩، مطبوعه مكتبه رشيدية سركى روڈ کوئٹه.

🔷یہی امام سیوطی رحمہ اللّٰہ ہی یوں بھی فرماتے ہیں۔

فيستحب لنا اظهار الشكر بمولده صلى الله عليه وسلم.

“حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے میلاد شریف پر اظہارِ تشکر کرنا ہمارے لئے مستحب ہے”

⛔الحلبی: انسان العیون فی سیرة الامين المامؤن المعروف به السيرة الحلبية ، باب: تسمية صلى الله عليه وسلم محمدا واحمدا ، جلد: ١، ص: ١١٧، مطبوعه دار الكتب العلمية بيروت ، لبنان.

    (2۔) امام شہاب الدین ابو العباس احمد بن ابی بکر قسطلانی رحمہ اللہ (المتوفی: ٩٢٣ھ) صاحب “ارشاد السارى لشرح صحيح البخاري” میلاد شریف کے متعلق اپنا نقطہ نظر کچھ یوں بیان فرماتے ہیں:

لا زال أهل الاسلام يحتفلون بشهر مولده صلى الله عليه وسلم ويعملون الولائم ويتصدقون فى لياليه بانواع الصدقات ويظهرون السرور ويزيدون فى المبرات ويعتنون بقراة مولده الكريم ويظهر عليهم من بركاته كل فضل عظيم.

محافل میلاد النبی

“ہمیشہ سے اہل اسلام حضور نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی ولادت باسعادت کے مہینے میں محافل میلاد کا اہتمام کرتے آئے ہیں ۔ اور کھانا کھلاتے ہیں اور صدقات و خیرات کرتے ہیں ۔اس مہینہ کی راتوں میں اور خوشی کا اظہار کرتے ہیں ۔اور نیکیوں میں اضافہ کرتے ہیں اور میلاد شریف پڑھنے کا اہتمام کرتے ہیں ۔ اور ان پر برکتیں اور فضل عظیم ظاہر ہوتا ہے”

⛔ المواهب اللدنية بالمنح المحمدية للقسطلانى، المقصد الأول ، ذكر رضاعه صلى الله عليه وسلم ، جلد:١، ص: ٧٨، مطبوعه دار الكتب العلمية بيروت ، لبنان.

⛔ تاريخ الخميس فى احوال انفس نفيس ، الركن الأول: الحوادث من عام ولادته صلى الله عليه وسلم إلى زمان نبوته ، ذكر ارضاع الا ظار وعددها وما وقع عند حليمة ، جلد: ١، ص: ٤٠٩، مطبوعه دار الكتب العلمية بيروت ، لبنان.

فائدہ:اس عبارت اور حوالے سے واضح حروف میں ثابت ہوا کہ میلاد شریف کی محفلیں منعقد کرنا ، واقعات میلاد شریف بیان کرنا ، غرباء کو کھانا کھلانا اور صدقہ و خیرات کی کثرت کرنا ، اچھے کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لینا ، خوشی و مسرت کا اظہار کرنا ہمیشہ سے اہل اسلام آئمہ و محدثین کا طریقہ رہا ہے ۔

میلاد النبی

✍️ابو الحسن محمد افضال حسین نقشبندی مجددی ۔

(٣٠/٩/٢٠٢٣)

میلاد اور وہابی

‏ان مسخروں کو سال کے 12 مہینے غریب کی بیٹی یاد نہیں آتی البتہ ربیع الاوّل میلاد کا مہینہ شروع ہوتے ہی انہیں غریب کی بیٹی یاد آ جاتی ہے۔

Eid Milad un Nabi Mubarak

عید میلاد النبی ﷺ یا میلاد کو لے کر ایسی ایسی بکواس لکھتے ہیں کہ توبہ مجھے سمجھ نہیں آتی کہ اتنا بغض کیوں ؟

milad un nabi

غریب کی بیٹی کو صرف میلاد کے پیسوں سے ہی کیوں شادی کرنی ہے زکاتہ صدقہ بھی تو پھر ہے؟؟ بیوہ مسکین غریب کا گھر چولہا وغیرہ کے لئے صدقہ بھی ہوتا ہے زکات سسٹم بھی ہے ؟ لوگ ویسے بھی اللّه کی راہ میں دیتے رہتے ہیں

اب رہ گئی دوسری بات یہ کس جاہل کا کہنا ہے کہ گھر گلی کو سجانے والے، پکوان بنا کر تقسیم کرنے والے ، نعتیں سننے والے نماز روزہ نہیں کرتے حضور ﷺ کی سیرت پر عمل نہیں کرتے

اخے ۔ریلی نکالنے والے نمازیں قضا کرتے ہیں چھوڑتے ہیں انکا کوئی لینا دینا نہیں حضور ﷺ کی سیرت احادیث و قرآن سے تمہیں کیسے پتا. ہو سکتا ہے وہ تم سے بہتر مسلمان ہو۔

تم لوگ کیسے کہتے ہو میلاد منانے والے نمازیں قضا کرتے چھوڑتے ہیں عملی کوئی کام نہیں کرتے ؟خدا ہو ؟

تماشہ بنا رکھا ہے

فسادی کوئی موقع فساد کا ہاتھ سے نہیں جانے دیتے گند اچھے دنوں پر پھیلانا انکا فرض ہے حق سمجھ کر ادا کرتے ہیں ۔

وابی مولوی فُل غصے میں ، منبر پر بیٹھ کر منہ سے تھوک گراتا ہوا فتوے پہ فتوی دیتے جا رہا تھا

میلاد شرک ہے ، بدعت ہے

یہ کوٸی عشق رسول نہیں

یہ سب فضول خرچی ہے

ہمارا دین ہمیں یہ سب کچھ نہیں سکھاتا

کسی غریب کی مدد کر دیں ، کسی کی بیٹی کی شادی کروا دیں

milad un nabi

میں نے سر اٹھایا اور معصومیت بھرے لہجے میں

بس اتنا پوچھا

کہ

کتنی رہ گٸی ہیں

وابی مولوی 🔥🔥🔥

😂😂😂

‏آج ایک عرب عالمِ دین نے لکھا کہ

” وابی کو میلاد شریف کی خوشی سے زیادہ کوئی چیز غضب ناک نہیں کرتی ۔ “

واقعی یہ حقیقت ہے ، اس حِرماں نصیب قوم کو رسول اللہ ﷺ کے جشنِ ولادت سے بہت زیادہ قلبی اذیت ہوتی ہے ، جب پوری دنیا کے مسلمان بہ صد شوق میلاد شریف منارہے ہوتے ہیں ، یہ لوگ غیظ و غضب میں جل رہے ہوتے ہیں ۔

milad un nabi

اللہ کریم اِنھیں شرحِ صدر عطا فرمائے ، اور اُن دلائل کی طرف اِن کی رہنمائی کرے جو میلاد شریف پر کثیر علما و محدثین نے جمع فرمائے ہیں ۔

خاکِ راہِ حجاز

I am Muhammad Adnan Khan Chunda. I am student(Talib e Ilm) Of Jamia Muhammadiya Hanfiya Sulamani Near Jatta Adda Naivela. I love To Teach You Islamic Information like Masail,Hadees and Quotes of Bazurgane din.

Leave a comment