حضرتِ سیّدنا علی المرتضیٰ کی حضرتِ سیدنا عمر فاروق سے محبت🕯

Rate this post

🕯حضرتِ سیّدنا علی المرتضیٰ کی حضرتِ سیدنا عمر فاروق سے محبت🕯

حضرتِ ابی السفر رحمہ اللّٰہ بیان کرتے ہیں کہ :

 رُئِيَ عَلٰی عَلِيٍّ بُرْدٌ کَانَ يُکْثِرُ لُبْسَهُ، قَالَ : فَقِيْلَ لَه : إِنَّکَ لَتُکْثِرُ لُبْسَ هٰذَا الْبُرْدِ، فَقَالَ : إِنَّهُ کَسَانِيْهِ خَلِيْلِي وَصَفِيِّي وَصَدِيْقِي وَخَاصِّي عُمَرُ، إِنَّ عُمَرَ نَاصَحَ اﷲَ فَنَصَحَهُ اﷲُ ثُمَّ بَکٰی ۔

” حضرتِ سیدنا علی المرتضیٰ رضی اللہ عنہ کے پاس ایک ایسی چادر دیکھی گئی جو وہ اکثر پہنا کرتے تھے”.

راوی نے کہا کہ حضرتِ سیدنا علی المرتضیٰ رضی اللہ عنہ سے پوچھا گیا کہ آپ کثرت سے یہ چادر(کیوں) پہنتےہیں؟ تو انہوں نے فرمایا:

“بےشک یہ مجھے میرے خلیل ، نہایت عزیز اور خاص دوست عمر نے پہنائی تھی. بے شک عمر(رضی اللہ عنہ)ﷲ تعالیٰ کے لیے خالص ہوئے تو ﷲ تعالیٰ نے ان کے لیے خالص بھلائی چاہی پھر آپ رضی اللہ تعالیٰ عنہ رونے لگ گئے”.

⛔مصنف ابن ابى شيبة ، كتاب الفضائل ، باب : ما ذكر فى فضل عمر بن الخطاب رضى الله عنه ، رقم الحديث : ٣١٩٩٧ ، جلد : ٦ ، ص : ٣٥٦ ، مطبوعه مكتبة الرشد ، الرياض.

⛔الشريعة للاجرى ، كتاب مذهب امير المؤمنين على بن ابى طالب ، باب : ذكر مذهب امير المؤمنين على بن ابى طالب ، رقم الحديث : ١٨١٥ ، جلد : ٥ ، ص : ٢٣٢٧ ، مطبوعه دار الوطن ، الرياض.

⛔ فضائل الصحابة للدارقطنى ، رقم الحديث : ٥ ، ٦ ، ١٥ ، ص : ٣٥ ، ٣٦ ، ٤٢ ، مطبوعه مكتبة الغرباء الاثرية ، السعودية.

⛔ تاریخ دمشق لابن عساكر ، رقم الترجمة : ٥٢٠٦ ، عمر بن الخطاب… الخ ، جلد : ٤٤ ، ص : ٣٦٣ ، مطبوعه دار الفكر للطباعة والنشر والتوزيع ، دمشق.

🔹 امام ابو الحسن علی الدارقطنی رحمہ اللّٰہ (المتوفی : ٣٨٥ھ) نے یہی مضمون اپنی سند کے ساتھ حضرتِ عمر بن شرحبیل رحمہ اللّٰہ سے روایت کیا ہے ، ملاحظہ فرمائیں :

⛔ فضائل الصحابة للدارقطنى ، رقم الحديث : ١٠ ، ١٤ ، ص : ٣٩ ، ٤١ ، مطبوعه مكتبة الغرباء الاثرية ، السعودية.

🔸 امام ابن ابی الدنیا رحمہ اللّٰہ ( المتوفی : ٢٨١ ھ) نے یہی مضمون اپنی سند کے ساتھ حضرتِ ابی حیان التمیمی رحمہ اللّٰہ سے روایت کیا ہے ، ملاحظہ کریں :

⛔الاخوان لابن ابى الدنيا ، باب : فى تعاهد الاخوان بالكسوة ، رقم الحديث : ٢٢١ ، ص : ٢٤٨ ، مطبوعه دار الكتب العلمية بيروت ، لبنان.

♦️ فوائد :

✯حضرت سیدنا علی المرتضیٰ رضی اللہ عنہ ، حضرت سیّدنا عمر فاروق رضی اللہ عنہ سے بے حد محبت فرماتے تھے ۔

✯مولی مرتضیٰ رضی اللہ عنہ حضرتِ عمر رضی اللہ عنہ کے تحفہ (چادر مبارک) کو بڑی محبت سے اوڑھا کرتے تھے اور انہیں یاد کر کے رویا کرتے تھے ۔

✯حضرت سیدنا علی المرتضیٰ رضی اللہ عنہ ، حضرت سیّدنا عمر فاروق رضی اللہ عنہ کے فضائل و مناقب برسر عام بیان کیا کرتے تھے ۔

✯بعض آئمہ نے اس روایت کو ضعیف کہا ہے ، لیکن ضعیف روایت فضائل و مناقب میں بیان کی جا سکتی ہے۔

✯صحابہ کرام رضی الله تعالیٰ عنھم کی آپس کی محبت کی تو قرآن نےگواہی دی اور اس پر پوری امت کا اجماع ہے۔

✍️ابو الحسن محمد افضال حسین نقشبندی مجددی ۔

((٢٠/رمضان المبارك ١٤٤٥ھ//٣١/مارچ ٢٠٢٤ء))

I am Muhammad Adnan Khan Chunda. I am student(Talib e Ilm) Of Jamia Muhammadiya Hanfiya Sulamani Near Jatta Adda Naivela. I love To Teach You Islamic Information like Masail,Hadees and Quotes of Bazurgane din.

Leave a comment